اسلامی جمعیت طلبہ کا اسلامیہ کالج خالی کرانے کیخلاف مظاہرہ


اسلامی جمعیت طلبہ کی جانب سے اسلامیہ کالج کو خالی کرائے جانے کے خلاف مظاہرہ کیا جا رہا ہے—تصاویر بشکریہ فیس بک
اسلامی جمعیت طلبہ کی جانب سے اسلامیہ کالج کو خالی کرائے جانے کے خلاف مظاہرہ کیا جا رہا ہے—تصاویر بشکریہ فیس بک

کراچی میں اسلامی جمعیت طلبہ کی جانب سے اسلامیہ کالج کو خالی کرانے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔

مظاہرے میں اسلامیہ کالج کی ملکیت کی دعوے دار حسنہ قریشی نے بھی شرکت کی۔

اسلامیہ کالج کے طلباء کی جانب سے احتجاجی طور پر کالج کے باہر کلاس رومز قائم کر کے تعلیمی سلسلہ جاری رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ترجمان اسلامی جمعیت طلبہ کراچی اسامہ عاقل اور دیگر ذمے داران اسلامیہ کالج کی صورتحال پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے
ترجمان اسلامی جمعیت طلبہ کراچی اسامہ عاقل اور دیگر ذمے داران اسلامیہ کالج کی صورتحال پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے

کراچی کے تاریخی تعلیمی ادارے اسلامیہ کالج کے طلباء کے ساتھ مجرمانہ برتاؤ کے خلاف اسلامی جمعیت طلبہ کے تحت احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔

مظاہرے میں شریک طلباء کا کہنا ہے کہ اگر کالج خالی کروایا گیا تو ہم کلاسز باہر لیں گے، ہم کالج پر کسی طور پر قبضہ نہیں کرنے دیں گے۔

طلباء کی جانب سے قبضے کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی۔

اسلامی جمعیت طلبہ کے تحت اسلامیہ کالج کو خالی کرائے جانے کے خلاف مظاہرہ کیا جا رہا ہے
اسلامی جمعیت طلبہ کے تحت اسلامیہ کالج کو خالی کرائے جانے کے خلاف مظاہرہ کیا جا رہا ہے

طلباء نے مطالبہ کیا ہے کہ محکمۂ تعلیم سندھ سپریم کورٹ میں کیس کے حوالے سے متحرک کردار ادا کرے اور کالج کو قبضے سے بچایا جائے۔

مظاہرے میں اسلامیہ کالج کی ملکیت کی دعوے دار حسنہ قریشی نے بھی شرکت کی۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ 1947ء کے بعد میرے دادا اور والد نے تعلیم کو فروغ دینے کے لیے اسلامیہ کالج قائم کیا تھا۔

اسلامی جمعیت طلبہ کے تحت اسلامیہ کالج کو خالی کرائے جانے کے خلاف کالج کی عمارت کے باہر مظاہرہ کیا جا رہا ہے
اسلامی جمعیت طلبہ کے تحت اسلامیہ کالج کو خالی کرائے جانے کے خلاف کالج کی عمارت کے باہر مظاہرہ کیا جا رہا ہے

حسنہ قریشی کا یہ بھی کہنا تھا کہ کے ایم سی سے تعلیم کے لیے پلاٹ لیا گیا تھا، دادا اور ان کے دوستوں نے پیسے لگائے تھے، کالج کے خلاف سندھ حکومت کی کارروائی درست نہیں ہے۔





Source link

Leave a Comment

Your email address will not be published.